Daily Systematic Metro EPaper News National and International Political Sports Religion
اہم خبریںپاکستان

مداخلت برداشت نہیں ، عدلیہ کی آزادی پر حملے کی صورت سب سے پہلے میں کھڑا ہونگا ، چیف جسٹس

چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے کہا ہے کہ میں کسی کے پریشر میں نہیں آتا ، عدلیہ میں کسی قسم کی مداخلت برداشت نہیں کریں گے۔ عدلیہ کی آزادی پر کسی قسم کا حملہ ہو گا تو سب سے پہلے میں اور میرے ساتھی کھڑے ہوں گے۔

چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی سربراہی میں 7 رکنی لارجز بینچ اسلام آباد ہائی کورٹ کے 6 ججز کے خط پر از خود نوٹس کیس سماعت کر رہا ہے۔

بینچ میں جسٹس منصور علی شاہ، جسٹس یحییٰ آفریدی، جسٹس جمال مندوخیل، جسٹس اطہر من اللّٰہ، جسٹس مسرت ہلالی اور جسٹس نعیم اختر افغان شامل ہیں۔

مختلف وکلاء اور لاہور ہائی کورٹ بار نے بھی اس معاملے پر آئینی درخواستیں دائر کر رکھی ہیں، 6 ججز نے عدلیہ کے معاملات میں خفیہ اداروں کی مداخلت کے الزامات لگائے ہیں۔

چیف جسٹس نے سماعت کے آغاز میں کہا کہ وہ زمانے گئے، جب کیس فکس کرنے کا اختیار چیف جسٹس کے پاس تھا، اب 3 رکنی کمیٹی ہے جو کیسز کا فیصلہ کرتی ہے، کمیٹی کو عدالت کا اختیار استعمال کرنا چاہیے نہ عدالت کو کمیٹی کا۔

چیف جسٹس نے حامد خان سے مخاطب ہو کر سوال کیا کہ آپ نے کوئی درخواست دائر کی ہے تو کمیٹی کو بتائیں، پٹیشنز فائل ہونے سے پہلے اخباروں میں چھپ جاتی ہیں، کیا یہ پریشر کے لیے ہے؟ میں تو کسی کے پریشر میں نہیں آتا، نئی چیز شروع ہو گئی ہے، وکیل کہہ رہے ہیں کہ از خود نوٹس لیں، جو وکیل از خود نوٹس لینے کی بات کرتا ہے اُسے وکالت چھوڑ دینی چاہیے۔

Related posts

آرمی چیف کی کاکول فٹنس کیمپ میں شریک کھلاڑیوں کیلئے دعوتِ افطار

Mobeera Fatima

اسلام آباد ہائیکورٹ کا بشریٰ بی بی کے ٹیسٹ کروا کر رپورٹ پیش کرنیکا حکم

Mobeera Fatima

کوسٹ گارڈ کی گوادر میں کارروائی ، اربوں روپے کی منشیات برآمد

Mobeera Fatima

Leave a Comment

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. قبول کریں۔ مزید پڑھیں

Privacy & Cookies Policy