Daily Systematic Metro EPaper News National and International Political Sports Religion
اہم خبریںپاکستان

نکاح کیس ، خاور مانیکا اور عمران خان کے وکیل سلمان اکرم راجہ میں تلخ جملوں کا تبادلہ

عدت میں نکاح کیس میں سزا کے خلاف بانی پی ٹی آئی عمران خان کی اپیل پر سماعت کے دوران خاور مانیکا اور سلمان اکرم راجہ میں تلخ جملوں کا تبادلہ ہوا۔

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ اسلام آباد کے جج شاہ رخ ارجمند نے عدت میں نکاح کیس میں سزا کے خلاف عمران خان اور بشری بی بی کی اپیلوں پر  سماعت کی ، شکایت کنندہ خاور مانیکا اور عمران خان کے وکیل سلمان اکرم راجہ عدالت میں پیش ہو ئے۔

خاورمانیکا نے جج شاہ رخ ارجمند پرعدم اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میرے خاندان کو تباہ کر دیا گیا ہے ، آپ کے گھر کے ساتھ یہ ہو تو پتا چلے، مجھے نہیں لگتا کہ مجھے انصاف ملے گا  آپ یہ کیس ٹرانسفر کر دیں۔

اس پر جج نے کہا آپ نے یہ کیسے سوچ لیا، کیا کوئی ثبوت ہے، میں پی ٹی آئی کے لیے ہمدردی دکھاتا ہوں؟ آپ بتائیں مجھ پر کیا الزام ہے؟ 21 سال کے کیرئیر میں پہلی بارہوا کہ مجھ پر اعتراض ہوا، کل مجھے بھی قبر میں جانا ہے آپ کو بھی ، میرے لیے کرسی اہم نہیں۔

خاور مانیکا نے کہا کہ بات مشہور ہو گئی ہے کہ جج بشریٰ بی بی اور سابق چیئرمین پی ٹی آئی کو بری کر دیں گے۔

اس موقع پر خاورمانیکا اورعمران خان کے وکیل سلمان اکرم راجہ کے درمیان تلخ جملوں کا تبادلہ ہوا، سلمان اکرم نے خاورمانیکا سے متعلق کہا کہ یہ بندہ انتہا کا جھوٹا ہے، خاور مانیکا نے جواب دیا کہ ٹرائل کے دوران عمران خان نے سلمان اکرم کوتھپکی دی تو یہ گند اچھالنے لگے۔

خاور مانیکا نے زلفی بخاری سے متعلق کہا کہ وہ میرے گھر میسج اور میری بیٹیوں کو فون کالز کیوں کررہا ہے؟

جج شاہ رخ ارجمند نے کہا کہ جب کوئی پارٹی کیس کے بعد باہرنکلتی ہے تو کہتی ہے جج نے پیسے لے لیے، اپیل کی اسٹیج ہوتی ہے میں کسی اور کو کیس ٹرانسفر نہیں کر سکتا۔

سیشن جج نے کہا کہ کیس اس حد تک سن چکا ہوں ، کیس کسی اور عدالت میں ٹرانسفر نہیں ہو سکتا، سیکشن 528 کے مطابق اس معاملے میں ہائیکورٹ ہی کچھ کر سکتا ہے۔

Related posts

پاکستان ریلوے نے 9 ماہ میں 66 ارب کما لیے

Mobeera Fatima

اداکار عمران خان کی فلمی دنیا میں واپسی، عامر خان کی فلم میں جلوہ گر ہونگے

Mobeera Fatima

نیتن یاہو اگر ملک میں داخل ہوئے تو گرفتار کر لیا جائے گا، جرمنی

Mobeera Fatima

Leave a Comment

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. قبول کریں۔ مزید پڑھیں

Privacy & Cookies Policy